اسپین میں تارکین کے کمپلیکس میں آتشزدگی

0

بارسلونا: اسپین میں تارکین وطن کے رہائشی کمپلیکس میں خوفناک آگ لگ گئی، جس سے کئی تارکین وطن کی جانیں چلی گئی ہیں، جبکہ دو درجن سے زائد زخمی بھی ہیں، 200 سے زائد تارکین وطن سوئے ہوئے تھے، آگ کی شدت اتنی زیادہ تھی کہ تارکین وطن نے جانیں بچانے کے لئے چھلانگیں لگادیں۔

تفصیلات کے مطابق اسپین کے شہر بارسلونا میں تارکین وطن کو ایک گودام میں رہائش دی گئی ہے، جہاں ایک روز قبل رات میں اچانک آگ بڑھک اٹھی، اس وقت وہاں 200 سے زائد تارکین وطن سوئے ہوئے تھے، آگ کی شدت اتنی زیادہ تھی کہ بلڈنگ کے اوپری حصے پر موجود تارکین وطن نے جانیں بچانے کے لئے چھلانگیں لگادیں، حکام کے مطابق ابتدائی طور پر 3 تارکین وطن کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں، جن کی ہلاکت آگ کی وجہ سے ہوئی ہے، جبکہ 20 سے زائد زخمی ہیں، اور ان میں بھی 7 کی حالت تشویشناک بتائی گئی ہے، زخمیوں میں اکثریت ان  تارکین کی ہے، جنہوں نے جانیں بچانے کے لئے اوپر سے چھلانگیں لگادی تھیں۔

امدادی کارکنوں کا کہنا ہے کہ انہیں تین لاشیں ملی ہیں، لیکن وہاں مزید لاشیں بھی ہوسکتی ہیں، اس لئے امدادی آپریشن جاری ہے، چیف فائر آفیسر ڈیوڈ بورل کا کہنا تھا کہ ہم ڈرون اور کتوں سے بھی مدد لے رہے ہیں، کمپلیکس میں مقیم تارکین وطن کو اب دوسری محفوظ جگہوں پر منتقل کردیا گیا ہے، ہسپانوی وزیراعظم  پیڈرو شانزے نے واقعہ پر افسوس کا اظہار کیا ہے، اور پھنسے ہوئے لوگوں کی جانیں بچانے پر امدادی کارکنوں کو خراج تحسین پیش کیا ہے، علاقے کے مئیر کا کہنا ہے کہ یہ کمپلیکس گزشتہ 8 برسوں سے تارکین وطن استعمال کررہے تھے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.